English / اُردو

منصوبہ بندی اور اعدادو شمار

منصوبہ بندی کے بغیر با معنی تبدیلی لانا نا ممکن ہے۔ منصوبہ بندی کے لیے ضروری ہے کہ اعدادوشمار مؤثر،قابل اعتماد اور اپ ٹو ڈیٹ ہو۔ ستمبر 2013 ء میں وزارت تعلیم نے’نیشنل پلان آف ایکشن ٹو ایکسلریٹ ایجوکیشن رلیٹڈ ایم ڈی جیز‘ بنایا۔ یہ ایک مثبت قدم ہے اور نیشنل پلان آف ایکشن کو مناسب طریقے سے رائج کیا جانا چاہیے۔ تازہ اور قابل اعتماد اعداد و شمار کے ساتھ ساتھ اس پلان کو مضبوط بنانے کے لیے اقدامات کی ضرورت ہے۔ بہتر منصوبے تیار کرنے کے لیے مختلف تحقیقی رپورٹس، ڈیٹا سیٹ اور اعداد و شمار موجود ہیں۔ ان میں سے کچھ مندرجہ ذیل ہیں:

ہمارے حکمرانوں کا کیا کہنا ہے

”ہمارے پاس عمل کرنے کے لیے بہت سے اعدادو شمار اور رپورٹس موجود ہیں لیکن اس کے لیے ضروری ہے کہ سیاست دانوں کو متحرک کیا جائے ان کے پاس یہ رپورٹس بھی موجود ہیں اور وہ اس مسئلے کو سمجھتے بھی ہیں لیکن اعدادوشمار اور حکومت کے عمل کے درمیان خلیج کو عبور کرنا بہت مشکل ثابت ہوا ہے۔“

”جو ڈیٹا الف اعلان نے فراہم کیا ہے وہ شاید حکومت کے پاس پہلے سے تھا لیکن الف اعلان سے پہلے ہمیں اس تک رسائی نہیں تھی کیونکہ ہمارا حکومت کے ساتھ واسطہ نہیں تھا۔“

”ہم تب تک بحران سے نہیں نکل سکتے جب تک ہمیں مسئلے کا پورا اندازہ نہ ہو۔ میرے پاس جو معلومات ہیں ان کی بدولت نہ صرف میں بہتر بات چیت کر سکتا ہوں بلکہ اپنے مطالبات کو بھی بہتر طور پر پیش کر سکتا ہوں۔“